دنیا کا امیر ترین گاؤں The Richest Village In The World

The Richest Village In The World - Dilchasp Maloomat - Dunya Ka Ameer Tareen Gaon The-Richest-Village-In-The-World-Urdu-Hindi-dilchasp-maloomat

          چین کا امیر ترین گاؤں٬ ہر فرد کروڑ پتی

عام طور پر گاؤں کا نام سنتے ہی سب سے پہلے ذہن میں کچے پکے مکانات اور ٹوٹے پھوٹے راستوں کیا خیال آتا ہے لیکن کیا آپ کسی ایسے گاؤں کے سوچ سکتے ہیں ہیں جہاں 72 منزلہ بلند و بالا عمارت٬ فضا میں موجود ہیلی کاپٹر ٹیکسیاں٬ تھیم پارک اور قطار در قطار بنے پرتعیش ولاز موجود ہوں؟ اگر نہیں تو جان لیجیے کہ واقعی دنیا میں ایک ایسا منفرد گاؤں بھی موجود ہے جہاں یہ تمام پرتعیش سہولیات موجود ہیں-

چینی صوبے Jiangsu میں واقع Huaxi نامی گاؤں چین کا سب سے امیر ترین گاؤں ہے- اس گاؤں کا ہر رہائشی لاکھوں یوآن کا مالک ہے- یعنی پاکستانی کروڑوں روپے۔

اس گاؤں کی آبادی 2 ہزار افراد پر مشتمل ہے اور ہر فرد کے بینک اکاؤنٹ میں ایک ملین یوآن ( تقریباً ڈیڑھ کروڑ پاکستانی روپیہ ) سے زائد رقم موجود ہے- اس کے علاوہ گاؤں میں رہائش اختیار کرنے والے ہر خاندان کو حکام کی جانب سے ایک گھر اور گاڑی بھی فراہم کی گئی ہے-

گاؤں کے حکام کی جانب سے رقم سمیت تمام پرتعیش سہولیات ہر اس فرد کو فراہم کی جاتی ہیں جو کہ اس گاؤں میں آکر رہائش اختیار کرتا ہے-

لیکن حکام کی جانب سے ملنے والی ہر رہائشی کو 1 ملین یوآن کی رقم٬ گاڑی اور گھر مشروط ہے- اگر کوئی خاندان یا رہائشی گاؤں چھوڑ کر جاتا ہے تو اسے یہ رقم اور دیگر سہولیات حکام کو واپس کرنا ہوتی ہیں- وہ ان تمام سہولیات سے صرف اس وقت تک استفادہ کرسکتا ہے جب تک کہ وہ گاؤں میں رہائش پذیر ہے-

درحقیقت اس گاؤں میں سوشلسٹ نظام رائج کیا گیا ہے جس میں ہر چیز کسی ایک فرد کی نہیں بلکہ پورے معاشرے کی ملکیت ہوتی ہے اور اس طرح ہر فرد ہر طرح کی سہولت سے برابر لطف اندوز ہوسکتا ہے-

یہ گاؤں چینی صوبے Jiangsu کے شہر Jiangyin کے حکام کے زیرِ انتظام ہے- یہ ایک ساحلی خطہ ہے اور اپنے زرعی وسائل اور خوبصورت اور حسین قدرتی مناظر کی وجہ سے مشہور ہے-

گزشتہ کئی سالوں سے چینی حکام اس گاؤں میں رائج سوشلسٹ نظام کو ایک بہترین مثال کے طور پر پیش کر رہے ہیں- گزشتہ ماہ اس گاؤں کی 55ویں سالگرہ منائی گئی ہے اور حکام کے مطابق 50 سالوں کے دوران یہ گاؤں جو کہ غریب تھا ایک انتہائی امیر گاؤں میں تبدیل ہوگیا ہے-

یہ گاؤں سال 2003 میں اس وقت اچانک خبروں کی زینت بن گیا جب چین کے Economic Strategies and Practice نامی ادارے کے اعداد و شمار کے نے انکشاف کیا کہ اس گاؤں کا سالانہ معاشی حجم 100 بلین یوآن ہے اور یہ انتہائی بلند حجم تھا-

سال 2011 میں اس گاؤں کے معاشی استحکام کی نمائش کے طور پر یہاں 72 منزلہ فلک بوس عمارت تعمیر کی گئی جس پر 3 بلین یوآن کی لاگت آئی- یہ عمارت 1076 فٹ بلند ہے اور پیرس کے مشہور ایفل ٹاور سے بھی 4 میٹر زائد بلند ہے-

اس عمارت میں ایک سپر فائیو اسٹار بین الاقوامی ہوٹل قائم ہے- یہ ہوٹل 826 کمروں 16 صدارتی سوئیٹس ایک سونے کے سوئیٹ پر مشتمل ہے-

عمارت کی 60ویں منزل پر واقع گولڈن سویٹ کا نہ صرف نظارہ حیرت انگیز ہے بلکہ اس سویٹ میں ایک ایسا مجسمہ بھی رکھا گیا جسے 1 ٹن سونے سے تیار کیا گیا ہے-

اس گاؤں میں ایک پرتعیش ٹرانسپورٹ کمپنی بھی موجود ہے جو رہائشیوں کو سفر کے لیے ہیلی کاپٹر فراہم کرتی ہے-Tongyong ائیر لائن کمپنی کا کہنا ہے کہ ہم اردگرد کے شہروں تک مسافروں کو 10 منٹ سے بھی کم وقفے میں پہنچا دیتے ہیں-

اس متاثر کن گاؤں میں ایک تھیم پارک بھی موجود ہے جس میں مقبول ترین یادگاروں کی نقول تعمیر کی گئی ہیں جیسے کہ دیوارِ چین وغیرہ- اس کے علاوہ گاؤں میں ایک شاندار میوزیم بھی موجود ہے جس میں 800 قدیم اشیاﺀ رکھی گئی ہیں-

تاہم صحافیوں کو اس گاؤں میں داخلے سے قبل سرکاری حکام سے اجازت طلب کرنا ہوتی ہے اور یہاں موجود دولت کو مکمل طور پر خفیہ رکھا جاتا ہے

  Duniya Ka Ameer Tareen Gaon - Dilchasp Maloomat

Aam tor par gaon ka naam suntay hi sab se pehlay zehen mein kachay pakkay makanaat aur tootay phootay raastoon kya khayaal aata hai lekin kya aap kisi aisay gaon ke soch satke hain hain jahan 72 manzila buland o baala imarat fizaa mein mojood helly copter taxian thim park aur qitaar Dur qitaar banay prtaysh vilaz mojood hon? agar nahi to jaan lijiye ke waqai duniya mein aik aisa munfarid gaon bhi mojood hai jahan yeh tamam prtaysh sahuliyaat mojood hain

cheeni soobay jiangsu mein waqay huaxi  nami gaon China ka sab se Ameer tareen gaon hai . is gaon ka har rehaishi lakhoon yoaan ka maalik hai yani Pakistani karorron rupay .

is gaon ki abadi 2 hazaar afraad par mushtamil hai aur har fard ke bank account mein aik million yoaan ( taqreeban daidh crore Pakistani rupiya ) se zayed raqam mojood hai is ke ilawa gaon mein rahaish ikhtiyar karne walay har khandan ko hakkaam ki janib se aik ghar aur gaari bhi faraham ki gayi hai

gaon ke hakkaam ki janib se raqam sameit tamam prtaysh sahuliyaat har is fard ko faraham ki jati hain jo ke is gaon mein aakar rahaish ikhtiyar karta hai

lekin hakkaam ki janib se milnay wali har rehaishi ko 1 million yoaan ki raqam gaari aur ghar mashroot hai thisishypenhere agar koi khandan ya rehaishi gaon chore kar jata hai to usay yeh raqam aur deegar sahuliyaat hakkaam ko wapas karna hoti hin- woh un tamam sahuliyaat se sirf is waqt taq istifada karsaktha hai jab taq ke woh gaon mein rahaish Pazeer hai

dar haqeeqat is gaon mein socialist nizaam raaij kya gaya hai jis mein har cheez kisi aik fard ki nahi balkay poooray muashray ki malkiat hoti hai aur is terhan har fard har terhan ki sahoolat se barabar lutaf andoz ho sakta hai

yeh gaon cheeni soobay jiangsu ke shehar jiangyin ke hakkaam ke zair-e intizam hai  yeh aik sahili khatta hai aur –apne zarayi wasail aur khobsorat aur Hussain qudrati manazair ki wajah se mashhoor hai

guzashta kayi saloon se cheeni hakkaam is gaon mein raaij socialist nizaam ko aik behtareen misaal ke tor par paish kar rahay hin- kuch mah pehly is gaon ki 55 win saalgirah manayi gayi hai aur hakkaam ke mutabiq 50 saloon ke douran yeh gaon jo ke ghareeb tha aik intahi Ameer gaon mein tabdeel hogaya hai

yeh gaon saal 2003 mein is waqt achanak khabron ki zeenat ban gaya jab China ke economic strategies and practice Nami idaray ke adaad o shumaar ke ne inkishaaf kya ke is gaon ka salana muashi hajam 100 billion yoaan hai aur yeh intahi buland hajam tha-

saal 2011 mein is gaon ke muashi istehkaam ki numayesh ke tor par yahan 72 manzila fallak bose imarat taamer ki gayi jis par 3 billion yoaan ki laagat aai yeh imarat 1076 foot buland hai aur Paris ke mashhoor ayfl tower se bhi 4 meter zayed buland hai

is imarat mein aik super five star bain al aqwami hotel qaim hai thisishypenhere yeh hotel 826 kamron 16 sadaarti swets aik sonay ke swet par mushtamil hai

imarat ki 60 win manzil par waqay golden swet ka nah sirf nzarah herat angaiz hai balkay is swet mein aik aisa mujasma bhi rakha gaya jisay 1 tan sonay se tayyar kya gaya hai

is gaon mein aik prtaysh tansport company bhi mojood hai jo rahaishion ko safar ke liye helicopter faraham karti hai -tongyong air line company ka kehna hai ke hum ird gird ke shehron taq musafiron ko 10 minute se bhi kam waqfay mein pouncha dete hin-

is mutasir kun gaon mein aik thim park bhi mojood hai jis mein maqbool tareen yadgaron ki naqool taamer ki gayi hain jaisay ke dewarِ e cheen waghera- is ke ilawa gaon mein aik shandaar museum bhi mojood hai jis mein 800 qadeem ashyaa rakhi gayi hain-

taham sahafion ko is gaon mein dakhlay se qabal sarkari hakkaam se ijazat talabb karna hoti hai aur yahan mojood doulat ko mukammal tor par khufia rakha jata hai

mazeed maloomat ke liye yahan click karein